دو نمبر ایجنٹوں کے خلاف گھیرا تنگ۔ اسلام آباد سے 4 مزید فراڈ ایجنٹ پکڑے گئے۔

 اسلام آباد: فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے انسداد انسانی سمگلنگ سیل نے اسلام آباد سے چار انسانی اسمگلروں کو گرفتار کیا ہے، میڈیا نے ہفتہ کو رپورٹ کیا۔

 تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نے انسانی اسمگلرز پر چھاپہ مار کر ان کے گروپ کے سرغنہ فیصل لطیف کو ای 11 سے اور سدیس علی، اسامہ خالد اور زید عباس کو اسلام آباد کے ایف ایٹ سیکٹر سے گرفتار کر لیا۔

 ایف آئی اے حکام نے بتایا کہ انسانی سمگلروں کو ترکی اور ایران کے راستے شہریوں کو غیر قانونی طور پر یورپ بھیجنے میں ملوث ہونے پر گرفتار کیا گیا۔

ایف آئی اے ترجمان کا کہنا ہے کہ چھاپے کے دوران 12 سے زائد پاسپورٹ اور متعدد جعلی ویزا سٹیکر بھی برآمد ہوئے ہیں۔

 اس سے قبل وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے گجرات سے انسانی اسمگلنگ کرنے والے گروہ کے سرغنہ کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

 ایف آئی اے نے یونان میں کشتی کے سانحہ میں ملوث ملزم محمد سلیم سنیارا کو گرفتار کر لیا جس میں پاکستانیوں سمیت متعدد افراد جان کی بازی ہار گئے تھے۔

 ملزم پاکستانیوں کو غیر قانونی طور پر بیرون ملک بھجوانے کے لیے اپنے بھائی محمد آصف سنیارا کو ہنڈی اور حوالہ کے ذریعے رقم بھیجتا تھا۔

 یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ اٹلی جانے والا ایک ماہی گیری ٹرالر مبینہ طور پر کم از کم 800 افراد کو لے کر گیا تھا – جس میں سینکڑوں پاکستانی بھی شامل تھے- بدقسمتی سے وہ یونان میں الٹ گیا تھا۔ صرف 104 افراد کے زندہ بچ جانے کے بارے میں جانا جاتا ہے اور مزید زندہ بچ جانے والوں کی تلاش کا امکان تقریباً صفر تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *